Wednesday, 19 October 2011

koi tujh sa ho to naam bhi tujh sa rakhay/ کوئی تجھ سا ہو تو نام بھی تجھ سا رکھے


ہر کوئی دل کی ھتھیلی پہ ہے صحرا رکھے
کس کو سیراب کرے کسے پیاسا رکھے


her koi dil ki hatheli pay hai sehra rakhay
kis ko sairaab karay kisay payasa rakhay


عمر بھر کون نبھاتا ہے تعلق اتنا
اے میری جان کے دشمن تجے اللہ رکھے


umr bhar kon nibhata hai ta'aluq itna
ay meri jaan kay dushman tujhay allah rakhay


ہم کو اچھا نہیں لگتا کوئی ھم نام ترا
کوئی تجھ سا ہو تو نام بھی تجھ سا رکھے


hum ko acha nhi lagta koi humnaam tera
koi tujh sa ho to naam bhi tujh sa rakhay


دل بھی پاگل ہے کہ اس شخص سے وابستہ ہے
کسی اور کا ہونے دے نہ اپنا رکھے


dil bhi pagal hai keh us shakhs say wabasta hai
kisi aur ka honay day na apna rakhay


ہنس نہ اتنا بھی فقیروں کے اکیلے پن پر
جا، خدا میری طرح تجھ کو بھی تنہا رکھے


hans na itna bhi faqeeron kay akelaypan par
jaa khuda meri tarha tujh ko bhi tanha rakhay


یہ قناعت ہے اطاعت ہے کہ چاہت ہے فراز
ہم تو راضی ہیں وہ جس حال میں جسیا رکھے


yeh qana'at hai ata'at hai keh chahat hai fraz
hum to razi hain wo jis haal men jesa rakhay
Post a Comment
Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...
Blogger Wordpress Gadgets