Wednesday, 12 December 2012

Woh Bhi Kayaa Din Thay Keh Pal Men Kar Diya Kartey Thay Hum




















Woh Bhi Kaya Mausum Thay Jinki Nikeh'eton Kay Zaai'qay..!!
Likh Diya Kartey Thay Khaal-o-Khad Ki Ra'nayee Kay Naam..!!


Woh Bhi Suh'batein Thein Jinki Musuarahat Kay Fas'oon...!!
Waqf Tha Ehl-e-Wafa Ki Bazm Aa'raii Kay Naam...!!


Woh Bhi Kaya Shaamen Thein Jin ki Shuhratein Mansoob Thein..!!
Be-Sabab Khuley Huwey Baalon Ki Ruswayee kay Naam...!!


Ab Kay Woh Rutt Hay Keh Har Taza Qayamat ka Azaab...!!
Apnay Jaagtey Zakhmon Ki Gehrayee Kay Naam...!!


Ab Kay Apnay Aansu'on Kay Sub Shikasta Aainay...!!
Kuch Zamaaney Kay Liye.... Kuch Tanhaaii Kay Na

am....!!


وہ بھی کیا دن تھے کہ پل میں کر دیا کرتے تھے ہم
عمر بھر کی چاھتیں ہر ایک ھرجائی کے نام

وہ بھی کیا موسم تھے جن کی نکہتوں کے ذائقے
لکھ دیا کرتے تھے خال و خد کی رعنائی کے نام

وہ بھی صحبتیں تھیں جن کی مسکراھٹ کے فسوں
وقف تھے اہل وفا کی بزم آرائی کے نام

وہ بھی کیا شامیں تھیں جن کی شہرتیں منسوب تھیں
بے سبب کھلے ھوئے بالوں کی رسوائی کے نام

اب کے وہ رت ھے کہ ہر تازہ قیامت کا عذاب
اپنے جاگتے زخموں کی گہرائی کے نام

اب کے اپنے آنسوؤں کے سب شکستہ آئینے
کچھ زمانے کے لیے،کچھ تنہائی کے نام

Post a Comment
Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...
Blogger Wordpress Gadgets