Thursday, 14 February 2013

"وصل"


کوئی کچھ بھی کہے لیکن

مرے نزدیک تو بس اس کا مطلب مختصر سا ھے

کہ اک بپھرا ھوا ساگر ھے"فرقت" جس کو کہتے ھیں

اسی ساگر میں اک چھوٹی سی نازک سی،
ابھرتی، ڈوبتی، موجوں سے لڑتی ھوئی ناؤ ھوتی ھے

اسی کو "وصل" کہتے ھیں
Post a Comment
Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...
Blogger Wordpress Gadgets