Thursday, 14 February 2013

Hatheliyon pay likhay naam hamsafar na huay



zubaan ka wird huay par dil men ghar na huay
hatheliyon pay likhay naam hamsafar na huay
ajab tareeqa hai jaanaan tujhay bhulanay ka
keh teri yaad say aik pal bhi be'khabar na huay

زباں کا ورد ہوئے پر دل میں گھر نہ ہوئے
ہتھیلیوں پہ لکھے نام ہمسفر نہ ہوئے
عجب طریقہ ہے جاناں تجھے بھلانے کا
کہ تیری یاد سے ایک پل بھی بےخبر نہ ہوئے
Post a Comment
Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...
Blogger Wordpress Gadgets