Friday, 24 May 2013

یه راه فقط لوٹ کے جانے کیلئے هے



یه خوش نظری ، خوش نظر آنے کیلئے هے
اندر کی اداسی کو چھپانے کیلئے هے

میں ساتھ کسی کے بهی سہی،پاس هوں تیرے
یه دربدری ایک ٹھکانے کیلئے هے

اس راه په اک عمر گزار آئے تو دیکھا
یه راه فقط لوٹ کے جانے کیلئے هے

ره ره کے کوئی خاک اڑا جاتا هے مجھ میں
کیا دشت هے اور کیسے دیوانے کیلئے هے

تجھ کو نہیں معلوم که میں جان چکا هوں
تو ساتھ فقط ساتھ نبھانے کیلئے هے

تو نسل _ ہوا سے هے، بهلا تجھ کو خبر کیا
وه دکھ جو چراغوں کے گھرانے کیلئے هے

Post a Comment
Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...
Blogger Wordpress Gadgets