Thursday, 27 June 2013

ہائے وہ لمحہ کہ جب تجھ سے شناسائی ہوئی


ہائے وہ لمحہ کہ جب تجھ سے شناسائی ہوئی
پھر جو ہونی تھی مِری جان وہ رسوائی ہوئی

اپنی ناکام محبت کا نہ یوں چرچا کرو
زخم بڑھ جائے گا گر اس کی پذیرائی ہوئی

پھر زمانے میںکسی نے اُسے دیکھا نہ سُنا
تیرے دربار میں جس شخص کی شنوائی ہوئی

جب تِری یاد کو کوئی بھی ٹھکانا نہ ملے
میری بانہوں میں چلی آتی ہے گھبرائی ہوئی
Post a Comment
Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...
Blogger Wordpress Gadgets