Monday, 4 November 2013

Naee Aankh ka Purana Khawab



Naee Aankh ka Purana Khawab
Aatish daan kay pass
Gulabi hiddat kay haalay men simat kar
Tujh sey baatain kartay huay
kabhi kabhi to aisa laga hai
jaisay oass par bheegi ghaas par
Us kay baazoo thamay huay
Main phir neend men jalnay lagi hoon

نئی آنکھ کا پُرانا خواب
آتش دان کے پاس
گُلابی حّدت کے ہالے میں سمٹ کر
تجھ سے باتیں کرتے ہوئے
کبھی کبھی تو ایسا لگا ہے
جیسے اُوس میں بھیگی گھاس پہ
اُس کے بازو تھامے ہوئے
میں پھر نیند میں چلنے لگی ہوں

Post a Comment
Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...
Blogger Wordpress Gadgets