Tuesday, 4 August 2015

محبت کے مزاروں تک چلیں گے

محبت کے مزاروں تک چلیں گے
ذرا پی لیں! ستاروں تک چلیں گے

سنا ہے یہ بھی رسم عاشقی ہے
ہم اپنے غمگساروں تک چلیں گے

چلو تم بھی! سفر اچھا رہے گا
ذرا اجڑے دیاروں تک چلیں گے

جنوں کی وادیوں سے پھول چن لو
وفا کی یادگاروں تک چلیں گے

حسین زلفوں کے پرچم کھول دیجیے
مہکتے لالہ زاروں تک چلیں گے

چلو ساغر کے نغمے ساتھ لے کر
چھلکتی جوئے باراں تک چلیں گے

Post a Comment
Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...
Blogger Wordpress Gadgets