Sunday, 29 November 2015

یہ تنہا لڑکی



!اے شبِ تار 
تجھکو معلوم بھی ہے ؟
تیری تاریکی میں دیئے جلانے والی
یہ تنہا لڑکی
اب تک اپنے ہاتھوں کی لکیروں سے
کیوں الجھتی ہے ؟
کس کی راہ تکتی ہے ؟
Post a Comment
Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...
Blogger Wordpress Gadgets