Thursday, 18 February 2016

اے مرے عشق کی بات۔ آہستہ چل


جانِ جاں ہے مرے ساتھ۔ آہستہ چل
جتنا ممکن ہے اے رات۔ آہستہ چل

یہ محبت کا رستہ خطرناک ہے
اے دلِ غیر محتاط۔۔۔ آہستہ چل

اتنی رسوائیاں ٹھیک ہوتی نہیں
اے مرے عشق کی بات۔ آہستہ چل

کتنی مشکل سے آئے ہیں وہ بزم میں
کچھ تو وقتِ ملاقات۔ آہستہ چل

اس کی لافانی تصویر تخلیق کر
کینوس پہ مرے ہاتھ۔ آہستہ چل
Post a Comment
Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...
Blogger Wordpress Gadgets