Tuesday, 3 September 2013

تم ________


تم ________ یاد ہو تو نقش ہو میرے حواس پر
تم ________ اشک ہو تو میرے دکھوں کا علاج ہو

تم ________ خواب ہو تو میری ان آنکھوں میں ہو کہاں ؟؟؟
تم ________ وہم ہو تو مجھ کو حقیقت سے کیا غرض ؟

تم ________ باعث سفر ہو ہنر کی اڑان ہو
تم ________ نیند ہو تو سو کے گزاریں گے یہ حیات

تم ________حسن ہو تو میرے تخیل کی جان ہو
تم ________ رات ہو تو مجھ کو کہاں صبح کی طلب

تم ________ نور بن کے دل میں سمائے ہو آج کل
تم ________خاک ہو تو خاک نشینوں کی ہو تلاش

تم ________ درد ہو تو رو ح پہ چھائے ہو آج کل
تم ________ دشت ہو تو میں بھی مسافر ہوں دشت کا

تم ________ چاند ہو تو تلخ اندھیروں کی کیا فکر ؟
تم ________ بے نیاز ہو تو زمانے سے ہو الگ

تم ________ رنگ ہو تو پھر یہ بہاروں کا ذکر کیا ؟
تم ________ بے ثمر رتوں میں بہاروں کی ہو امید

تم ________ رہ گذارِ شوق میں جذبہ جنوں کا ہو
تم ________ آرزو ہو ،اہل تمنا کی ہو خلش

تم ________ رت جگوں کی بھیڑ میں لمحہ سکوں کا ہو
تم ________ بے وفا رتوں میں حوالہ ہو عشق کا

تم ________ بے بسی ہو پھر بھی محیطِ حیات ہو
تم ________ اک کرن ہو نورِ_ازل سےدھلی ہوئی

تم ________ تازگی ہو شبنمی پھولوں کی آس ہو
تم ________ گہرے پانیوں میں چھپے موتیوں کا لمس

تم ________ موت کے سفر میں نشانِ حیات ہو
تم ________ میری چشمِ نم کی ستاروں کی کہکشاں

Post a Comment
Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...
Blogger Wordpress Gadgets